اردو(Urdu) English(English) عربي(Arabic) پښتو(Pashto) سنڌي(Sindhi) বাংলা(Bengali) Türkçe(Turkish) Русский(Russian) हिन्दी(Hindi) 中国人(Chinese) Deutsch(German)
2024 16:39
اداریہ۔ جنوری 2024ء نئے سال کا پیغام! اُمیدِ صُبح    ہر فرد ہے  ملت کے مقدر کا ستارا ہے اپنا یہ عزم ! روشن ستارے علم کی جیت بچّےکی دعا ’بریل ‘کی روشنی اہل عِلم کی فضیلت پانی... زندگی ہے اچھی صحت کے ضامن صاف ستھرے دانت قہقہے اداریہ ۔ فروری 2024ء ہم آزادی کے متوالے میراکشمیر پُرعزم ہیں ہم ! سوچ کے گلاب کشمیری بچے کی پکار امتحانات کی فکر پیپر کیسے حل کریں ہم ہیں بھائی بھائی سیر بھی ، سبق بھی بوند بوند  زندگی کِکی ڈوبتے کو ’’گھڑی ‘‘ کا سہارا کراچی ایکسپو سنٹر  قہقہے اداریہ : مارچ 2024 یہ وطن امانت ہے  اور تم امیں لوگو!  وطن کے رنگ    جادوئی تاریخ مینارِپاکستان آپ کا تحفظ ہماری ذمہ داری پانی ایک نعمت  ماہِ رمضان انعامِ رمضان سفید شیراورہاتھی دانت ایک درویش اور لومڑی پُراسرار  لائبریری  مطالعہ کی عادت  کیسے پروان چڑھائیں کھیلنا بھی ہے ضروری! جوانوں کو مری آہِ سحر دے مئی 2024 یہ مائیں جو ہوتی ہیں بہت خاص ہوتی ہیں! میری پیاری ماں فیک نیوزکا سانپ  شمسی توانائی  پیڑ پودے ...ہمارے دوست نئی زندگی فائر فائٹرز مجھےبچالو! جرات و بہادری کا استعارہ ٹیپو سلطان اداریہ جون 2024 صاف ستھرا ماحول خوشگوار زندگی ہمارا ماحول اور زیروویسٹ لائف اسٹائل  سبز جنت پانی زندگی ہے! نیلی جل پری  آموں کے چھلکے میرے بکرے... عیدِ قرباں اچھا دوست چوری کا پھل  قہقہے حقیقی خوشی
Advertisements

ہلال کڈز اردو

قہقہے

جون 2024

ایک عورت سبزی منڈی خریداری کرنے گئی۔ وہاں ایک سبزی والا اپنے ٹھیلے پر موجود ٹماٹروں پر مسلسل پانی چھڑ ک رہا تھا ۔ وہ عورت وہاں کھڑی خاموشی سے اسے دیکھتی رہی اور پھر تھوڑی دیر بعد بولی :’’ بھائی! جب یہ ٹماٹر ہوش میں آجائیں تو مجھے دو کلو دے دینا۔‘‘
.........
ایک اداس بچہ اپنے دوست کو کہنے لگا، ’’ اس بار ڈاکٹر نے مجھے کرکٹ کھیلنے سے منع کر دیا ہے۔‘‘
 دوست:’’ لگتا ہے اس نے تمہیں کرکٹ کھیلتے ہوئے دیکھ لیا ہے ۔‘‘
.........
ایک بے وقوف کوہوٹل میں نوکری مل گئی۔پہلے دن اُسے نمک دانیاں بھرنے کا کام دیا گیا ۔صرف ایک نمک دانی بھرنے میں اسے کئی گھنٹے لگ گئے۔ منیجر نے غصے میں آکر کہا، ’’تم نہایت سست اور کام چورلگتے ہو ، کل سے نوکری پر مت آنا ۔‘‘
بے وقوف نے پریشان ہوتے ہوئے کہا،’’جناب!میں کیا کروں، نمک دانیوں کے سوراخ ہی اتنے چھوٹے ہیں کہ نمک بڑی مشکل سے     اندرجاتا ہے۔‘‘
.........
 ایک فقیر نے گھر کے دروازے پر دستک دی اور کہا، ’’ اللہ کے نام پر کھانا کھلا دو۔ خاتون خانہ نے کھانا بجھوا دیا۔دوسرے دن فقیر اسی گھر کے دروازے پر ایک کتاب رکھ گیا جس کا عنوان تھا... ’’ لذیذ کھانا پکانے کے طریقے۔‘‘
.........
ایک ڈرائیور اپنے کان میں چابی سے خارش کر رہا تھا ۔ ایک مسافر اسے کافی دیر سے دیکھ رہا تھا ۔ آخراکتا کر بولا ،’’ ڈرائیور صاحب! اگر آپ سٹارٹ نہیں ہو رہے تو دھکا لگانا شروع کروں؟‘‘
.........
استاد(شاگرد سے): ’’کل تم ا سکول کیوں نہیں آئے ؟‘‘
شاگرد:’’جناب! مجھے برڈ فلو ہو گیا تھا۔‘‘
استاد: ’’بھئی، وہ تو مرغیوں کی بیماری ہے۔‘‘
شاگرد:’’ جناب!آپ نے مجھے انسان چھوڑا ہی کب ہے، روزانہ تو مرغا بنا دیتے ہیں ۔‘‘
.........
اُستاد: ’’وہ کون سی جگہ ہے جہاں بہت سے لوگ ہوتے ہیں مگرپھر بھی آپ تنہائی محسوس کرتے ہیں....؟‘‘
شاگرد: ’’کمرہ امتحان‘‘
.........
باپ (بیٹے سے):’’ کہو بیٹا! آج اسکول میں کیسے رہے؟‘‘
بیٹا :’’ سب سے اُونچا۔‘‘
باپ: ’’اچھا کمال ہے!‘‘
بیٹا:’’ جی ہاں! تمام دن بینچ پر کھڑا رہا۔ ‘‘
 

مضمون 215 مرتبہ پڑھا گیا۔