شعر و ادب

جب میں لوٹ کر گھر کو آئوں

جب میں لوٹ کر گھر کو آئوں
تو پرچم میں لپیٹی ہوئی آئوں
کہ وہ منظر گواہی دے
ہاں، وطن کے عشق میں سو گئی یہ 
میرا جست خاکی جب گھر لایا جائے
میری ماں کے ہاتھ میں پرچم تھمایا جائے
میری جدائی کا سوچ کر آنسو نہ بہانا 
میری خواہش ہے وطن کے عشق میں مرنا 
اس ملک کے ہی نام ہے میری یہ زندگی
میری ماں سے کہنا، فخر کریں شھیدوں میں سے ہے ان کی بیٹی ۔۔۔۔
  اریبہ جاوید
 

یہ تحریر 135مرتبہ پڑھی گئی۔

TOP