ہلال نیوز

آزاد کشمیر میں افواج پاکستان  کی کلین اینڈ گرین کشمیر مہم 

 پاک فوج کے زیر اہتمام کلین اینڈ گرین کشمیر مہم آزاد کشمیر میں زور شور سے منائی جا رہی ہے جس میں پاک فوج ،سول انتظامیہ اور مقامی آبادی شریک ہے اور اس مہم کے تحت آزاد کشمیر میں لاکھوں درخت لگائے جا رہے ہیں۔ گزشتہ دنوں مظفرآباد میں کلین اینڈ گرین کشمیر مہم کے تحت ایک تقریب منعقد کی گئی جس میں کمانڈر چنار ڈویژن میجر جنرل واجد عزیز نے خصوصی طور پر شرکت کی۔ تقریب میں ایڈیشنل چیف سیکرٹری ترقیات آزاد کشمیر ساجد محمود چوہان، سیکرٹری اطلاعات آزاد کشمیر محترمہ مدحت شہزاد، سیکرٹری جنگلات آزاد کشمیر سید ظہور الحسن گیلانی، سیکرٹری لوکل گورنمنٹ و دیہی ترقی آزاد کشمیر اعجاز احمد خان، سیکرٹری سپورٹس آزاد کشمیر ظفر نبی بٹ، سیکرٹری تعلیم سکولزز آزاد کشمیر احد عباسی، ایڈیشنل انسپکٹر جنرل آزاد کشمیر پولیس فہیم احمد عباسی، ڈائریکٹر جنرل اطلاعات آزاد کشمیر راجہ اظہر اقبال، کمشنر مظفرآباد ڈویژن محترمہ تہذیب النسا، ڈپٹی انسپکٹر جنرل آزاد کشمیر پولیس راجہ شہریار سکندر اور طلباء و طالبات کے علاوہ سول و عسکری حکام نے بھی شرکت کی۔ اس موقع پر کمانڈر چنار ڈویژن میجر جنرل واجد عزیز اور سیکرٹری محکمہ جات نے اپنے ہاتھ سے پودے لگا ئے اور شجر کاری مہم کا جائزہ لیااور پاک فو ج و محکمہ جنگلات آزاد کشمیر کی جانب سے لگائے گئے سٹالز کا معائنہ بھی کیا۔ اس موقع پر منعقدہ تقریب سے میجر جنرل واجد عزیز، کمانڈر چنار ڈویژن نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاک فوج، آزاد کشمیر میں سول انتطامیہ کے ساتھ مل کر شجرکاری مہم میں بھر پور انداز میں حصہ لے رہی ہے۔ کلین اینڈ گرین کشمیرمہم کے تحت اس مون سون کے موسم میں 0.5 ملین جبکہ اس سال 1.2 ملین پودے لگائے جائیں گے۔ یہ مہم 2025تک 5 سال کے عرصے کے لئے شروع کی گئی ہے جس کے تحت 5 سالوں میں 1.155 بلین پودے لگائے جائیں گے۔ انہو ں نے کہا کہ یہ کسی ایک ادارے یا حکومت کا کام نہیں بلکہ معاشرے کے ہر فرد کی ذمہ داری ہے کہ وہ اس قومی نوعیت کی مہم میں بھرپور انداز میں حصہ لے اور اسے کامیاب بنائے۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت دنیا کو ماحولیاتی چیلنجز کا سامنا ہے۔ زیادہ سے زیادہ درخت لگا کر ہم ان چیلنجز سے نبرد آزما ہو سکتے ہیں۔ اس طرح آلودگی کو کم کرنے کے حوالے سے بھی اس مہم کے تحت کام کیا جائے گا اور آزاد کشمیر کے خوبصورت سیاحتی مقامات کی صفائی بھی کی جائے گی تاکہ ہمارا ماحول صاف و شفاف رہ سکے۔ انہوں نے کہا کہ قدرت نے خطۂ کشمیر کو قدرتی حسن سے مالا مال بنایا جہا ں سیاحت کے شعبے میں بے پناہ مواقع موجو دہیں۔ کبھی یہاں کے رقبے کے 39 فیصد حصے پر جنگلات ہوا کرتے تھے جوا ب کافی حد تک کم ہو چکے ہیں۔ ہم سب کو مل کر ہنگامی طور پر اس طرف توجہ دینی ہو گی تاکہ آزاد کشمیر کودوبارہ اسی طرح سرسبز و شاداب بنایا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ پاک فوج تمام متعلقہ محکمہ جات اور سول انتظامیہ کے ساتھ مل کر شجرکاری مہم پر کام کر رہی ہے۔ عوام اپنی ذمہ داری سنبھالیں اور اس خطے کو سرسبز و شاداب بنانے میں فوج کے شانہ بشانہ اس مہم کا حصہ بنیں اس سے نہ صرف خطے کی خوبصورتی میں اضافہ ہو گا بلکہ ہماری معاشی حالت میں بھی بہتری آئے گی اور لوگوں کا معیار زندگی بلند ہو گا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ایڈیشنل انسپکٹر جنرل آزاد کشمیر پولیس فہیم احمد عباسی نے کہا کہ کشمیر کو اس کے جنگلات اور صاف پانیوں کی وجہ سے جنت کہا گیا ہے لیکن بدقسمتی سے یہ دونوں چیزیں اب ختم ہوتی جا رہی ہیں۔ اگر ہم نے مل کر اس جانب توجہ نہ دی تو یہ دونوں چیزیں بتدریج ختم ہوتی چلی جائیں گی جس کے انتہائی منفی اثرات مرتب ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں سیاحت کے لیے پُر امن علاقوں کو ترجیح دی جاتی ہے۔ خوش قسمتی سے آزادکشمیر ایک پر امن علاقہ ہے اور یہاں جرائم کی شرح ملک کے دیگر حصوں کی نسبت بہت کم ہے۔ آزاد کشمیر بنیادی طور پر سیاحتی خطہ ہے جنگلات زیادہ سے زیادہ لگانے سے کشمیر کے قدرتی حسن میں بھی اضافہ ہوگا۔



پاک فوج جہاں لائن آف کنٹرول پر دفاع وطن کے لئے سیسہ پلائی دیوار کی طرح کھڑی ہے وہاں آزاد کشمیر میں قدرتی ماحول کی حفاظت کے لئے بھی ہمیشہ اپنا کردار ادا کر تی رہی ہے۔ وادی نیلم کے گیٹ وے بلگراں میں بھی پاک فوج سول انتظامیہ اور کشمیری بچوں اور عوام کے ساتھ مل کر شجر کاری مہم چلارہی ہے۔ گورنمنٹ ڈگری کالج بلگراں میں پاک فوج کی جانب سے شجر کاری مہم کے سلسلے میں تقریب منعقد کی گئی۔ تقریب میں پاک فوج کے مقامی ایریا کمانڈر کرنل سکندر خان نے اپنے ہاتھ سے پودا لگایا جبکہ سکول اور کالج کے بچوں کی بڑی تعداد نے بھی پاک فوج کے افسران اور جوانوں کے ساتھ مل کر پودے لگائے۔ اسسٹنٹ کمشنر تحصیل پٹہکہ غلام محی الدین گیلانی، میجر ثفان ، ایس ایچ او پنجگراں منظر ، پرنسپل گورنمنٹ ڈگری کالج بلگراں اشفاق بانڈے، اور محکمہ جنگلات کے مقامی افسران نے بھی بچوں کے ساتھ مل کر شجر کاری کی۔ شجرکاری وشجرپروری سے آگاہی کے لئے واک بھی کی گئی جس میں فوج اور سول انتظامیہ اساتذہ اور بچوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ بچوں نے مختلف بینرز اور پلے کارڈز اُٹھا رکھے تھے جن پر جنگلات کی اہمیت اور ماحول دوستی کی عبارتیں درج تھیں۔ پاک فوج کے مقامی کمانڈر کرنل سکندر خان کواپنے درمیان دیکھ کر لائن آف کنٹرول کے مختلف دیہات سے آئے بچے بہت خوش ہوئے اور فرط جذبات سے پاک فوج زندہ باد ، پاکستان زندہ باد کے نعرے لگائے۔ کرنل سکندر خان بچوں میں گھل مل گئے اور ان کے ساتھ مل کر پودے لگائے۔ اس موقع پر مقامی کمانڈر کرنل سلطان خان نے کہا کہ فوج آزاد کشمیر بھر میں درخت لگا رہی ہے تاکہ یہاں کے باشندوں کو صاف ستھری آب و ہوا مل سکے۔ عوام شجرکاری مہم کا حصہ بنیں اور درخت لگا کر اپنا مستقبل محفوظ بنائیں۔ اسسٹنٹ کمشنر تحصیل پٹہکہ غلام محی الدین گیلانی نے اپنے خطاب میں کہا کہ دنیا میں موسمیاتی تبدیلیوں کی بنیادی وجہ درختوں کا تیزی سے خاتمہ ہے کشمیر جنگلات کی دولت سے مالا مال خطہ ہے لیکن ہم درختوں کا قتل عام کر کے کشمیر کے قدرتی حسن کو تباہ اور اپنے مستقبل کو غیر محفوظ بنا رہے ہیں ہم نے پاک فوج کی کلین اینڈ گرین مہم کے تحت آزاد کشمیر بھر میں لاکھوں پودے لگا کر شجرکاری مہم شروع کی ہے اس سے یہاںکے لوگوں میں ایک بار پھر جنگلات کی اہمیت اجاگر ہوئی ہے۔پرنسپل گورنمنٹ ڈگری کالج بلگراں مشتاق بانڈے نے کہا کہ بلگراں میں فوج کے ساتھ مل کر سکولوں اور کالجوں کے بچوں نے ہزاروں پودے لگائے ہیں فوج کی شجرکاری مہم سے عوام میں بالعموم اور نئی نسل میں بالخصوص جنگلات کی اہمیت اجاگر ہونے کے ساتھ ساتھ ان میں درخت لگانے کا شوق پیدا ہوا ہے۔ گورنمنٹ ڈگری کالج بلگراں کے طالبعلم ساجد محمود نے شجرکاری کے دوران صحافیوں کو بتایا کہ "ہم یہ ضرور پڑھتے تھے کہ جنگلات کی بہت اہمیت ہے اور ہمارے بزرگ بتاتے تھے کہ بلگراں کے خشک پہاڑ کسی دور میں جنگلات سے ڈھکے ہوتے تھے لیکن جب سے علاقے میں پاک فوج نے شجر کاری مہم شروع کی ہے پہلی بار ہم میں اپنے خشک پہاڑ دوبارہ ہرے کرنے کا شوق پیدا ہوا ہے میں اور میرے دوست فوج کی مہم سے متاثر ہو کر جگہ جگہ درخت لگا رہے ہیں ہم ان پودوں کے درخت بننے تک حفاظت بھی کریں گے"۔
یقینا حکومت پاکستان اور پاک فوج کی گرین اینڈ کلین کشمیر مہم سے عوام میں شجرکاری کا شوق پیدا ہوا ہے ضرورت اس امر کی ہے کہ حکومت آزاد کشمیر کے سرسبز کشمیر کے وژن کو پایۂ تکمیل تک پہنچانے کے لئے ہم سب اپنے اپنے حصے کا پودا ضرور لگائیں جو ایک طرف ثواب ہے جبکہ دوسری جانب انسانی بقا کے لئے ضروری بھی ہے۔
 (مضمون نگار ممتاز کشمیری صحافی و تجزیہ نگار ہیں اور جموں وکشمیر یونین آف جرنلسٹس کے مرکزی صدر ہیں )
 

یہ تحریر 165مرتبہ پڑھی گئی۔

TOP