ہلال نیوز

آرمی انسٹی ٹیوٹ آف ملٹری  ہسٹری کی نئی عمارت کا افتتاح

آرمی انسٹی ٹیوٹ آف ملٹری ہسٹری (AIMH) کا شمار پاکستان آرمی کے نسبتاً نئے لیکن اہم اداروں میں ہوتا ہے۔ جس کا بنیادی کام پاکستان آرمی کی تاریخ کو محفوظ بنانا اور اس کی ترویج و اشاعت ہے۔ مزید براں ملٹری ہسٹری کے شعبہ میں تعلیم و تحقیق بھی اس کے مقاصد میں شامل ہے۔



 AIMH کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ پاک فوج کے موجودہ سربراہ جنرل قمرجاوید باجوہ، نشانِ امتیاز (ملٹری) کی ذاتی دلچسپی کی بدولت 2017ء میں اس ادارے کا قیام عمل میں لایا گیا۔ اس ادارے نے عارضی طور پر جنرل ہیڈکوارٹرز کے اندر اپنے کام کا آغاز کیا۔ جبکہ جولائی 2018ء میں جنرل ہیڈکوارٹرز سے باہر، آرمی میوزیم اور آرمی سنٹرل لائبریری کے قریب ایک شاندار اور جدید سہولتوں سے آراستہ عمارت کی تعمیر کا آغاز ہوا جو 2020ء کے وسط میں اپنی تکمیل کو پہنچی۔
28 جولائی 2021ء آرمی انسٹی ٹیوٹ آف ملٹری ہسٹری کے لئے ایک تاریخی دن تھا کہ جب چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے آرمی انسٹی ٹیوٹ آف ملٹری ہسٹری کی نئی عمارت کا افتتاح کیا۔ اس موقع پر پاک فوج کے متعدد افسران بھی موجود تھے۔
ڈائریکٹر جنرل آرمی انسٹی ٹیوٹ آف ملٹری ہسٹری میجر جنرل آغا مسعود اکرم (ریٹائرڈ) نے ادارے کے تمام حاضر سروس افسران اور ریسرچ فیکلٹی کے ساتھ معزز مہمانوں کا استقبال کیا۔
تختی کی نقاب کشائی کے بعد ادارے کی سربلندی اور ترقی کے لئے خصوصی دعا کی گئی۔ رسم افتتاح کے بعد معزز مہمانوں کے لئے بریفنگ کا اہتمام کیا گیا۔ جس میں ادارے کی اب تک کی کارکردگی سے آگاہ کیا گیا نیز مستقبل کے اہم منصوبوں پر بھی روشنی ڈالی گئی۔ آرمی چیف نے AIMH کی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار کیا۔
بریفنگ کے بعد معزز مہمانوں نے AIMH کے مختلف شعبوں، لائونجز اور ہالز کا دورہ کیا اور ادارے کے امور میں دلچسپی کا اظہار کیا۔
 AIMH کی نئی عمارت پاکستان آرمی کی عظیم تاریخ کی آئینہ دار اور امین ہے اور اس کو بلاشبہ 'ہوم آف ملٹری ہسٹری' (Home of Military History) کا درجہ حاصل ہے۔
 

یہ تحریر 128مرتبہ پڑھی گئی۔

TOP