اداریہ

ملکی ترقی، باہمی رواداری اور یکجہتی کے ساتھ

قومیں باہمی رواداری، یکجہتی اور محبت کے ماحول میں پروان چڑھتی ہیں۔ مثبت طرزِ عمل قوموں کی منزل آسان بنا دیتا ہے۔تاریخ گواہ ہے کہ ملک کو جب جب چیلنجز کا سامنا ہوا، ہماری افواج اور قوم سیسہ پلائی دیوار بن گئے۔ قیامِ پاکستان سے قبل اس قوم نے بانی ٔ پاکستان قائداعظم محمدعلی جناح کی آواز پر لبیک کہا تو قیامِ پاکستان کے بعد کسی بھی جارحیت اور مشکل کے وقت یہی قوم یکجان ہو کر سامنے آئی۔ بلاشبہ قوم اپنے وطن کی سالمیت اور سرحدوں کی حفاظت کے لیے ہمیشہ اپنی افواج کے شانہ بشانہکھڑی دکھائی دیتی ہے۔ اس قوم کا طرئہ امتیاز ہے کہ یہ پاکستان کے بیرونی اور اندرونی دشمنوں سے ہمیشہ آگاہ اور اُن عناصر کے خلاف برسرِ پیکار رہی ہے۔قوم آج بھی متحد ہے ان عناصر کے خلاف جو  قوم کی صفوں میں دراڑ پیدا کرنے کے خواہاں ہیں۔ قوم کو پاکستان دشمنوں کی چالوں اور سازشوں کا بھی ادراک ہے۔ اُسے خطے کے جغرافیائی حالات کا بھی بخوبی اندازہ ہے کہ کس طرح اُس کا ایک پڑوسی دشمن ملک مسلمانوں کی نسل کشی کے لیے ہر حربہ استعمال کر رہا ہے۔ حال ہی میں' کشمیر فائلز ' نامی فلم میںجس طرح سے مقبوضہ جموں و کشمیرکے مسلمانوں کے خلاف نفرت کو اُبھارا گیا ہے وہ نہ صرف مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوںکے لیے خطرے کی گھنٹی ہے بلکہ بھارت کے اندر بسنے والے مسلمانوں کے لیے بھی لمحۂ فکریہ ہے۔
دوسری جانب وطنِ عزیز پاکستان  میں بسنے والی تمام اقلیتوں کے ساتھ نہ صرف  مثالی سلوک روا رکھا جاتا ہے بلکہ ملک کے تمام علاقوںکی ترقی و خوشحالی کے لیے یکساں مواقع پیدا کرکے اُنہیں ترقی کے دھارے میں شامل کیا جارہا ہے۔ صوبہ بلوچستان میں ریکوڈک منصوبے پر کئی برسوں کے تعطل کے بعد پھر سے کام شروع ہو چکا ہے جو یقینا پاکستان اور بالخصوص صوبہ بلوچستان کے عوام کے لیے گیم چینجر ثابت ہوگا۔ اسی طرح ضم شدہ قبائلی اضلاع میں سماجی و معاشی ترقی سے متعلق بہت سے منصوبے پایۂ تکمیل تک پہنچ چکے ہیں اور بہت سے منصوبوں پر کام جاری ہے۔
یہاں یہ امر بھی قابلِ ذکر ہے کہ اس ترقی اور خوشحالی کے پیچھے ملک میں جاری آپریشن ردالفساد کا بھی بہتبڑا کردار ہے۔ چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ کی ہدایت پریہ آپریشن تقریباً پانچ سال قبل فروری 2017 میں شروع کیا گیا۔ ملک میں امن و امان کے قیام میں اس آپریشن کا بہت بڑا کردار ہے کہ اس میں نہ صرف دہشت گردوں کے ٹھکانوں کا سراغ لگا کر اُن کا خاتمہ کیا گیا بلکہ ان کے سہولت کاروں کو بھی کیفرِ کردار تک پہنچایاگیا۔ یوں پاکستان اُن ممالک میں سرفہرست ہے جس نے اپنی سرزمین سے دہشت گردی کے عفریت کے خاتمے میں بیش بہا کامیابیاں حاصل کیں۔ اس کا کریڈٹ یقینا افواجِ پاکستان اور غیور پاکستانی قوم کو جاتا ہے۔ صرف ملکی اور علاقائی سطح پرہی نہیں، پاکستان اقوامِ متحدہ کے پرچم تلے بین الاقوامی سطح پر امن کے قیامِ کی بھی ایک تاریخ رکھتا ہے۔ پاکستانی افسر اور جوان بین الاقوامی امن کی خاطر جانوں کے نذرانے بھی پیش کر چکے ہیں جنہیںعالمی سطح پر بھی سراہا گیا ہے۔
 الحمدﷲ پاکستان دلیر اور جرأت مندقوم پر مشتمل سرزمین ہے جو اپنے وطن کی نظریاتی اور جغرافیائی سرحدوں کی امین ہے ۔قوم دفاعِ وطن کے حوالے سے بہت حساس واقع ہوئی ہے اور کسی بھی قسم کے اندرونی و بیرونی چیلنجز سے نبرد آزما ہونے کے لئے ہمیشہ کی طرح آج بھی اپنی مسلح افواج کی پشت پر پوری طاقت کے ساتھ کھڑی ہے۔     
پاکستان ہمیشہ سلامت رہے ||
 

یہ تحریر 370مرتبہ پڑھی گئی۔

TOP