ہلال نیوز

نیشنل ورکشاپ بلوچستان کے شرکاء کا نیول ہیڈکوارٹرز کا دورہ

گزشتہ دنوں نیشنل ورکشاپ بلوچستان کے شرکاء نے نیول ہیڈکوارٹرزاسلام آبادکا دورہ کیا۔پاک بحریہ کے سربراہ ایڈمرل محمد امجد خان نیازی نے ورکشاپ کے شرکاء سے خطاب کیا اور سوال و جواب نشست کے دوران مختلف سوالوں کے جواب دئیے۔



پاک بحریہ کے سربراہ نے اس موقع پر کہا کہ پاکستان نیو ی ملکی بحری سرحدوںاور گوادر بندرگاہ کی بحری گزرگاہوں کے دفاع اور حفاظت کے لیے ہر دم تیار ہے۔ پاکستان نیوی نے گوادر بندرگاہ اور اس کے بحری تجارتی راستوں کی حفاظت کے لیے ٹاسک فورس88-قائم کی ، اس کے علاوہ وہاں ایک سرفیس ٹاسک گروپ بھی تعینات ہے جس کے تحت دو سے تین بحری جہاز ہر وقت گوادر کے قرب و جوار میں موجود رہتے ہیں۔ نیز پاکستان نیوی روزانہ کی بنیاد پر گوادر بندرگاہ کی فضائی نگرانی بھی کرتی ہے۔
سربراہ پاک بحریہ نے شرکاء کو بتایا کہ سکیورٹی کو یقینی بناناپاک بحریہ کی اولین ترجیح ہے۔ پاک بحریہ نے اس سلسلے میں تمام ممکنہ اور ضروری اقدامات اُٹھا رکھے ہیں۔ساحلی علاقوں کی سکیورٹی کے لیے ساحلی پٹی کی تنصیبات کو جدیدآلات اور ہتھیاروں سے لیس کیا گیا ہے اور 5thجنریشن وار کے لیے مؤثر اقدامات کیے گئے ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان نیوی اپنے محدود وسائل کے باوجود دفاع کی ضروریات کو پورا کر رہی ہے ۔ پاک بحریہ کے جنگی بیڑے میں توسیع اور آبدوزوں میں اضافے کا عمل جا ری ہے۔ پاکستان نیوی قوم کو کبھی بھی مایوس نہیں کرے گی اور جب بھی وقت آیا جارحیت کرنے والے دشمن کو منہ توڑ جواب دیا جائے گا۔
 

یہ تحریر 100مرتبہ پڑھی گئی۔

TOP