ہلال نیوز

پاک بحریہ کے شہداء اور دورانِ سروس وفات پانے والے آفیسرز، پیٹی آفیسرز اور نیوی سویلینزکے اہلِِ خانہ میں گھروں کی تقسیم

پاک بحریہ اپنے شہداء کے کارناموں اور دورانِ سروس وفات پانے والے آفیسرز، پیٹی آفیسرز، سیلرز اور نیوی سویلینز کی خدمات کو انتہائی قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے ۔ پاک بحریہ کے موجودہ سر براہ کے وژن کی روشنی میں پاک وطن کی خاطر قربانی دینے والے شہداء اور ملک و قوم کی خدمت کرنے والے دورانِ سروس وفات پانے والے آفیسرز، پیٹی آفیسرز اور نیوی سویلینز کے اہل ِ خانہ کی فلاح و بہبود کو اوّلین تر جیح دی جارہی ہے۔اس سلسلے میں وقتاً فوقتاً مختلف فلاحی اقدامات کیے جاتے ہیں جن میں پاکستان نیوی کے ویلفیئر ہائوسنگ منصوبوں میں شہداء اور دوران ِ سروس وفات پانے والے آفیسرز، پیٹی آفیسرز اور نیوی سویلینز کے اہل ِ خانہ کو گھروں اور پلاٹ کی تفویض قابل ِ ذکر اقدام ہے۔اس سلسلے میں کراچی اور اسلام آباد میں الگ الگ تقریبات منعقد کی گئیں۔ اِن تقریبات کے دوران پاک بحریہ کی شہداء اور دورانِ سروس وفات پانے والے آفیسرز ،پیٹی آفیسرز اور نیوی سویلینز کے اہل ِ خانہ میں زمین کے الاٹمنٹ لیٹر اور گھروں کی چابیاں تقسیم کی گئیں۔ اِن تقریبات میں پاک بحریہ کے سربراہ ایڈمرل ظفر محمود عباسی اور بیگم چیف آف نیول اسٹاف ، بیگم شاہینہ عباسی نے بطورِ مہمانِ خصوصی شرکت کی ۔ 
تقریب سے خطاب کے دوران مہمان ِخصوصی نے شہداء کے کارناموںاوردوران ِسروس وفات پانے والے آفیسرز کی خدمات کو خراج ِتحسین پیش کیا اور ان کے اہل ِخانہ کے حوصلے اور جذبے کو سراہا۔سربراہ پا ک بحریہ نے پاکستان نیوی ویلفیئر ہائو سنگ سکیم کی افادیت کو اُجاگر کیا۔انہوں نے کہا کہ سال 2009میں پاکستان نیوی ویلفیئر سکیم کا آغاز کیا گیا تھا۔ سال 2018میں اس پردوبارہ نظر ثانی کی گئی اور تمام آفیسرز، سی پی اوز اور شرائط پر اُترنے والے سویلینز کو اس کا ممبر بنایا گیا تاکہ تمام لوگ اس سے فائدہ اُٹھا سکیں۔اس سکیم کے تحت سروس سے ریٹائرمنٹ پر پاک بحریہ کے آفیسرز، پیٹی آفیسرز اور نیوی سویلینز کو گھر دئیے جاتے ہیں۔ شہداء اور دورانِ سروس وفات پانے والے آفیسرز، پیٹی آفیسرز اور نیوی سویلینز کے اہلِ خانہ کو اس سکیم میں بلا معاوضہ گھر دیئے جاتے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ میں مسرت محسوس کرتا ہوں کہ آج میرے خواب کو حقیقت ملی ، میں اس کاوش میں شامل تمام لوگوں کا شکرگزارہوں۔قابل ِ اطمینان بات یہ ہے کہ یہ گھر انتہائی قلیل مدت میں مکمل ہوئے جو کہ کسی طرح بھی ایک نہایت ہی اعلیٰ تعمیراتی معیار سے کم نہیں۔سربراہ پاک بحریہ نے مزیدکہا کہ اس سکیم کی ایک خوبی یہ بھی ہے کہ سروس سے وابستہ افراد ریٹائرمنٹ کے بعد اپنے ذاتی گھر کی فکر سے آزاد ہوں گے اور اگر خدانخواستہ وہ دورانِ سروس شہید ہوجاتے ہیں یا وفات پا جاتے ہیں تو ان کے اہلِ خانہ کو زندگی بسر کرنے کے لئے گھر ضرور میسر ہو گا۔
قبل ازیںڈپٹی چیف آف نیول سٹاف (ویلفیئر اینڈ ری ہیبلیٹیشن) ، ریئر ایڈمرل شیخ عمران ناصر نے حاضرین کو بتایا کہ پاک بحریہ کا ویلفیئر اینڈ      ری ہیبلیٹیشن ڈائریکٹوریٹ ، نیول چیف کے وژن کے مطابق اپنے فلاحی منصوبوں کو بروقت مکمل کر رہا ہے جن میں معیاری اور بہترین تعمیراتی سازوسامان کے استعمال کو یقینی بنایا جاتا ہے۔
ڈائریکٹر پاکستان نیوی ویلفیئر ہائوسنگ سکیم نے بن قاسم پراجیکٹ کے حوالے سے حاضرین کو بریفنگ دی ۔
علاوہ ازیںشہداء اور دوران سروس وفات پانے والے آفیسرزکے اہلِ خانہ میںگھراور بلاک نمبرکے حوالے سے گھروں کی تقسیم کے لیے قرعہ اندازی کی تقریب کا انعقاد کریسنٹ ہال کارساز میںکیا گیا۔ جس کے مہمانِ خصوصی ڈائریکٹر جنرل پاکستان نیوی ہائوسنگ سکیم کموڈور نوید انور چیمہ تھے۔
 

یہ تحریر 34مرتبہ پڑھی گئی۔

TOP