متفرقات

ماہنامہ ’’ہلال‘‘ کو منظوم خراجِ تحسین

ماہنامہ ’’ہلال‘‘ کو منظوم خراجِ تحسین

(ماہنامہ ہلال کی اشاعت کے 67 برس مکمل ہونے پر قمر زمان صدیقی کا منظوم خراجِ تحسین)


ہے شاندار پیشکش آئی ایس پی آر کی

کہتے ہیں جس کو ہم سبھی ماہنامۂ ’’ہلال‘‘
اک قابلِ تحسین رسالہ ہے فوج کا

خدماتِ عسکری سے عبارت ہے یہ ’’ہلال‘‘
انیس سو اڑتالیس میں اس کا ہوا جنم

اور پھر عُروج پاتا گیا اپنا یہ ’’ہلال‘‘
افواجِ پاکستان کی اِک عمدہ سی کاوش

اُن کی شُجاعتوں کا ہے اِک ذکر یہ ’’ہلال‘‘
جرأت‘ بہادری ہے شعار اپنی فوج کا

اِس ٹھوس حقیقت کا ہے عکاس یہ ’’ہلال‘‘
وہ آرمی ہو‘ نیوی ہو یا ہو فضائیہ

تینوں کی ہی خدمات بیاں کرتا ہے ’’ہلال‘‘
تحریریں اس کی ساری ہیں دلچسپ و معیاری

تحریروں میں بے مثل ہے اپنا جی یہ ’’ہلال‘‘
میرے وطن کے سارے محافظ بڑے دلیر

کامل ثبوت دیتا ہے اِس بات کا ’’ہلال‘‘
ہیں یہ زمیں کے ’’شیر‘‘ تو ’’شاہین‘‘ فضا کے

قربانیاں سب اِن کی رقم کرتا ہے ’’ہلال‘‘
تعمیرِ وطن میں بھی نمایاں ہے پاک فوج

اس کام پر بھی فخر کیا کرتا ہے ’’ہلال‘‘
ہے قدرتی آفات میں بھی فوج مددگار

اِس بات کا ادراک بھی رکھتا ہے یہ ’’ہلال‘‘
ہر لحظہ آفرین کے قابل ہے پاک فوج

خدمت کا جس کی ترجماں بے شک ہے یہ ’’ہلال‘‘
شہدائے پاک فوج ہیں تعظیم کے قابل

شہداء کے ذکر سے بھی سجا کرتا ہے ’’ہلال‘‘
شہداء نے اپنے خُوں سے وطن کو دی زندگی

اِن کو خراج پیش کیا کرتا ہے ’’ہلال‘‘
ساری ’’ہلال ٹیم‘‘ کو اپنا سلام ہو

خدمت میں ارضِ پاک کی کوشاں ہے یہ ’’ہلال‘‘
ہے یہ دعا ’’قمر‘‘ کی یہ پُھولے پھلے یونہی
شہرت کے آسماں پہ رہے اپنا یہ ’’ہلال‘‘
ارض وطن کی خدمتیں کرتا رہے یونہی
رفعت پہ گامزن رہے ’’ماہنامۂ ہلال‘‘
قمر الزمان صدیقی

یہ تحریر 38مرتبہ پڑھی گئی۔

TOP