شعر و ادب

ماں کی اوڑھنی

یہ جو سانولی سلونی

 

یہ جو نت نئی نویلی

 

یہ جو خوبرو سجیلی

 

یہ جو رنگ بھر رنگیلی

 

یہ جو سرمئی زمیں ہے

 

یہ زمیں ہی میری ماں ہے

 

یہ زمیں میری اماں ہے

 

یہ دعا ہے آسماں کی

 

یہی میرا آسماں ہے

 

یہ ہلالی سبز پرچم

 

جو ستارے چاند والا

 

سارے جگ سے جو نرالا

 

یہ جمالی سبز پرچم

 

میری ماں کی اوڑھنی ہے

 

میری ماں کی دلکشی ہے

 

میری ماں کے سارے بچو

 

چلو آؤ قسمیں کھائیں۔

 

جی جان سے نبھائیں

 

اسی ماں کی اوڑھنی کا

 

میں بھی وقار رکھوں

 

تم بھی وقار رکھنا

 

میں بھی سنبھال رکھوں

 

تم بھی سنبھال رکھنا

 

میں بھی خیال رکھوں

 

تم بھی خیال رکھنا

 

آنکھوں میں دل میں رکھنا

یہ تحریر 48مرتبہ پڑھی گئی۔

TOP