اداریہ

فرد قائم ربط ملت سے ہے، تنہا کچھ نہیں

ماہِ نومبر مصورِ پاکستان، شاعرِ مشرق، علامہ اقبال کی پیدائش کا مہینہ ہے۔ قدرت نے انہیں ایک عظیم ملّی اورقومی خدمت کے لیے مقرر کررکھا تھا۔ انہوں نے اپنی شاعری کے ذریعے برصغیر کے مسلمانوں میں ایک نئی رمق اور روشنی پیدا کی۔ گوکہ انہوں نے 1930 میں خطبہ الٰہ آباد میں مسلمانوں کے لیے ایک الگ وطن کی نشاندہی کرکے انہیں ایک سمت دکھائی لیکن انہوں نے اپنی شاعری کے ذریعے برصغیر کے مسلمانوں میں وہ ترنگ پیدا کیے رکھی کہ وہ پاک سرزمین کے حصول کے لیے بانیِ پاکستان قائداعظم محمدعلی جناح کی قیادت میں مصروفِ عمل رہے۔علامہ اقبال نے خودی اور تفاخر کا جوشعور مسلم اُمہ میں پیدا کیا اس کے نتیجے میں قدرت نے برصغیر کے مسلمانوں کو پاکستان کی شکل میں ایک عظیم انعام سے نوازا۔ آج قیامِ پاکستان کے75 برس بعد بھی اقبال کی شاعری ہماری قوم کی طاقت ہے۔ ہمارے عوام اقبال کی شاعری کے دلدادہ ہیں تو ہماری سپاہ قیادت کے اصولوں کا تعین علامہ کی شاعری ہی سے کرتی ہے۔ آج بھی ہماری مسلح افواج کے جوان اور افسر اقبال کی شاعری سے رہنمائی لیتے اور جذبوں میں توانائی کا احساس اُجاگر کرتے ہیں۔
نگہ بلند، سخن دلنواز، جاں پُرسوز
یہی ہے رختِ سفر میرِ کارواں کے لیے
اقبال نے قوم کو خودی اور وقار کا جو درس دیا ہے یہ اُسی کی بدولت ہے کہ آج ہم ایک غیور قوم کے طور پر جانے جاتے ہیں جو اپنے سبز ہلالی پرچم کی سربلندی کے لیے اپنا سب کچھ قربان کرنے کا حوصلہ رکھتے ہیں۔آج الحمدﷲپاکستان کا دفاع مضبوط ہاتھوں میں ہے ۔ یہ ایٹمی طاقت رکھنے والی پُرامن مملکت ہے جس نے نہ صرف بین الاقوامی بلکہ خطے کے امن کے لیے بھی بیش بہا خدمات سرانجام دی ہیں۔پاکستان آج بھی اپنی امن کی پالیسی پر گامزن ہے جس کا اعادہ گزشتہ دنوں چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے پاکستان ملٹری اکیڈمی کاکول میں146 ویں لانگ کورس کی پاسنگ آئوٹ پریڈکے موقع پرکیا۔ انہوں نے کہا کہ ہماری امن کی خواہش کو کمزوری نہ سمجھا جائے، پاکستان ایک پُرامن ملک ہے اور ہمسایوں سے اچھے تعلقات چاہتا ہے اور ہمسایوں کے ساتھ تمام معاملات پرُامن طور پر حل کرنے کا خواہاں ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ کسی بھی فیک نیوز اور پراپیگنڈے پر توجہ نہ دیں۔ ملک کا دفاع مضبوط ہاتھوں میں ہے ۔ انہوں نے کہا پاکستان کو دہشت گردی سے نجات دلانے کے لیے پاک فوج نے بہت قربانیاں دی ہیں، کسی ملک، گروپ یا تنظیم کو پاکستان کو غیر مستحکم کرنے کی اجازت  نہیں دی جائے گی۔
یقینا چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ کی باتیں قوم اور سپاہ کے دل کی آواز ہیں کہ ہمیشہ قوم اور مسلح افواج نے باہم مِل کر ہی ملک کو درپیش ہر چیلنج کا سامنا کیا ہے اور ہر گرداب سے نکلنے میں کامیاب رہے ہیں۔ دہشت گردی کا عفریت بلاشبہ ایک بہت بڑا چیلنج تھا لیکن قوم اور افواج نے اپنی جانوں کی قربانیاں پیش کرکے اس عفریب کا خاتمہ کیا ہے۔ آج الحمدﷲ پاکستان ہر حوالے سے ایک پُرامن سرزمین ہے۔ اس میں دو رائے نہیں کہ قوم اپنی افواج کی پشت پر کھڑی ہوتی ہے، قوم کا اعتماد اور محبت ہی افواج کو اس قابل کرتی ہے کہ وہ ملک کو درپیش کسی بھی خطرے پر قابو پانے میں  کامیاب ٹھہرتی ہیں۔ یوں ملک کا ہر ہر ادارہ اور ہر ہر فرد اپنے تئیں پاکستان کی بنیادیں مضبوط سے مضبوط تر کرنے میںاپنا کردار ادا کرتا ہے۔
فرد قائم ربط ملت سے ہے تنہا کچھ نہیں
موج ہے دریا میں بیرونِ دریا کچھ نہیں ||


 

یہ تحریر 101مرتبہ پڑھی گئی۔

TOP