ہلال نیوز

گلگت میں پروفیشنل باکسنگ ایونٹ کا انعقاد 

گزشتہ دنوں لالک جان اسٹیڈیم گلگت میں پاکستان اور گلگت  بلتستان کی تاریخ کے سب سے بڑے پروفیشنل باکسنگ ایونٹ کا انعقاد کیا گیا ۔اس ایونٹ کے انعقاد میں پاک فوج نے کلیدی کردار ادا کیا ۔باکسنگ مقابلے دیکھنے کے لیے شایقین کی بہت بڑی تعداد نے شرکت کی جس میں مرد،خواتین اور بچے شامل تھے۔ اس کے علاوہ قومی کرکٹر سہیل تنویر اور محمد موسیٰ نے بھی شرکت کی۔اس میگا ایونٹ میں دس ممالک کے باکسرز نے حصہ لیا جن میں ملائیشیا ،فلپائن ،تھائی لینڈ ،انڈونیشیا ،یو اے ای ،کمیرون ،نائجیریا، کوریا اور افغانستان کے باکسر شامل تھے ۔اس کے علاوہ تاریخ میں پہلی مرتبہ خواتین کا بھی باکسنگ مقابلہ ہو ا جس میں گلگت کے ضلع ہنزہ سے تعلق رکھنے والی باکسر راحیلہ اور کوئٹہ سے تعلق رکھنے والی زینب کے درمیان مقابلہ ہوا ۔مقابلہ دونوں خواتین کے مابین ٹائی ہو گیا ۔باکسنگ چیمپیئن شپ کی دوسری فائٹ ملائیشیا کے ڈائینولئل اور پاکستان کے سکندر عباسی کے مابین ہوئی جس میں ملائیشیا کے ڈائینو لئل کامیاب ہوئے۔ پاکستان کے شفیع اللہ اور انڈونیشیا کے رنٹو رنگ کے مقابلے میں پاکستان کے شفیع اللہ نے اپنے مخالف کو ناک آؤٹ کیا ۔



اس ایونٹ کا سب سے بڑا مقابلہ عالمی شہرت یافتہ باکسر عثمان وزیر اور تھائی لینڈ کے باکسر پھتی پھن کرنگ کلنگ کے مابین ہوا ۔جس کے دوسرے رائونڈ میں عثمان وزیر نے اپنے حریف کو با آسانی ناک آؤٹ کیا اور باکسنگ چیمپئن شپ کا ٹائٹل جیت لیا ۔
اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے معروف باکسر عثمان وزیر نے کہا کہ گلگت  بلتستان میں نوجوانوں کی صلاحیتوں کو آگے لانے اور پاکستان کے سافٹ امیج کو دنیا میں اجاگر کرنے کے لیے اپنی مدد آپ کے تحت یہ فائٹ کروائی۔ تاریخ میں پہلی بار دس ملکوں کے باکسرزنے کسی ایونٹ میں حصہ لیا۔انہوں نے مزید کہا کہ اس ایونٹ کا مقصد پاکستان اور گلگت  بلتستان میں امن اور سیاحت کے شعبے کو فروغ دینا بھی تھا ۔
شائقین کی جانب سے اس کامیاب ایونٹ کے انعقاد پر عثمان وزیر کو مبارک دی گئی۔شائقین نے بہتر سکیورٹی انتظامات پر پاک فوج اور پولیس جوانوں کو بھی سلام پیش کیا اور صوبائی حکومت سے پر زور اپیل کی کہ اس قسم کی صحت مندانہ سرگرمیوں کے انعقاد کے لیے علاقے کے ہنر مند نوجوانوں کی حوصلہ افزائی کی جائے ۔    (رپورٹ: سید تنویر حسین
 

Read 108 times


TOP