ہلال نیوز

کراچی کور کے زیرِ انتظام  شجرکاری

پاکستان میں2018ء میں شجر کاری مہم کا آغاز ہوا جس کے تحت اگلے پانچ سالوں میں ملک بھر میں دس بلین پودے لگانے کے عزم کا کیا گیا۔پاکستان آرمی بھی اس قومی مہم میں شامل ہوئی اور چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے پودا لگاکراس مہم کا آغاز کیا۔اس مہم کو' سر سبز و شاداب پاکستان، کا نام دیا گیااور ملک بھر میں پاکستان آرمی کے زیرِ اہتمام10 ملین پودے لگانے کا ہدف مقرر کیا گیا۔ چیف آف آرمی سٹاف نے درختوں کی اہمیت کو اُجاگر کرتے ہوئے کہا کہ درخت زندگی ہیں لہٰذا ہم سب کی اولین ترجیح ملک بھر میں زیادہ سے زیادہ پودے لگانا ہونی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ ماحولیاتی آلودگی اور گلوبل وارمنگ کا تدارک بھی درخت لگا کر کیا جاسکتاہے۔
ان ہدایات کی روشنی میں کراچی کور نے بھی جدید اور سائنسی بنیادوں پرمزید تیز اور مؤثر انداز میںاس مہم کا آغاز کیا۔ اس کے لئے ماہرینِ نباتات کی خدمات حاصل کی گئیں جنہوں نے مختلف علاقوں کی زمینی ساخت، آب و ہوا، پانی کی دستیابی اور اِ ن علاقوں کے لئے موزوں پودوں کے انتخاب سے متعلق آگاہی اور تربیت دی جس کی وجہ سے کراچی کورکی جانب سے لگائی گئی نرسریوں میں پودوں کی افزائش کا تناسب حوصلہ افزا رہا۔ 
کور کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل ہمایوں عزیز کی ہدایات پرکو ر ایس او ایس سیل قائم کیا گیا جس کی ذمہ داری5 کور آرٹلری کو سونپی گئی جہاں کور کمانڈرنے پودا لگاکر اس مہم کا آغاز کیا تھا۔مذکورہ سیل کے ماتحت کراچی، ملیرچھائونی،ڈی ایچ اے، اندورن سندھ، حیدرآباداور پنوں عاقل چھائونیوں میں فارمیشن سیل بنائے گئے۔ 5 کور کی تمام فارمیشنز اپنی اپنی چھائونیوں، پاکستان رینجرز (سندھ)صحرائی علاقوں اور ڈی ایچ اے کراچی شہر میں اس مہم کو کامیاب بنارہے ہیں۔
5 کور کی سر سبز و شاداب مہم کی خاص بات اس میں تمام لوگوں کی شرکت اور جذبہ ہے۔ ایک مثبت حکمتِ عملی کے تحت تمام سینیئررینکس سے لے کر جونئیرز تک سب نے اس قومی مہم میں حصہ ڈالا۔ عسکری اداروں اور سول سوسائٹی کا خوبصورت امتزاج سامنے آیا اور بچوں اور بڑوں سب نے اس کارِ خیر میں شرکت کی اور یہ بہترین حکمتِ عملی اس مہم کی کامیابی کی ضامن بھی بنی۔



2018ء کے مون سون سیزن میں گیارہ لاکھ جبکہ2019ء میں37 لاکھ پودے لگانے بشمول20 لاکھ بیج بونے کا ٹارگٹ پورا کیا گیا۔ ساتھ ہی دونوں سابقہ موسمی مہموں کے دوران لگائے گئے پودوں کی دیکھ بھال اور ناکارہ پودوں کی تبدیلی کا عمل بھی کامیابی سے جاری رہا جس کے لئے نرسر یاں قائم کی گئی ہیں۔حیدرآباد اور پنوں عاقل کے علاقوں میں بیجوںکا فضائی سپرے کیا گیا جوکہ ایک جدید طریقہ ہے جسے سری لنکا اور جاپان سمیت دیگر ترقی یافتہ ممالک نے اپنایا ہے۔ اس کے علاوہ ٹریکٹر، ڈِگنگ مشینیں، الیکٹرک جنریٹر اور ٹرانسفارمر بھی اس مقصد کے لئے مختص کئے گئے ہیں۔2020-2022ء کے سال ان پودوں کی دیکھ بھال اور نگہداشت کے سال قرار پائے ہیں۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ بحیثیت قوم اس مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا جائے اور اداروں کے ساتھ ساتھ انفرادی طو ر پر بھی زیا دہ سے زیادہ پودے لگائے جائیں کیو نکہ یہ ہماری نسلوں کی صحت، زندگی اور بقاء کا مسئلہ ہے۔
 

Read 65 times


TOP