ہلال نیوز

وادی تیراہ کے قبائل کی واپسی

وادی تیراہ سے کوچ کرنے والے مختلف قبائل کی واپسی جاری ہے اور اب تک چھ ہزار سے زائد خاندان اپنے علاقوں میں واپس آچکے ہیں۔ستمبر2022 تک پندرہ ہزار سے زائد خاندانوں کی واپسی کے انتظامات مکمل کئے جا چکے ہیں۔ضلعی انتظامیہ اور فرنٹیر کور (نارتھ) کے عہدیداران ضلع خیبر کی وادی تیراہ میں بارہ سال کے طویل عرصہ کے بعد علاقے میں واپس آنے والے خاندانوں کا خیر مقدم کر رہے ہیں۔ اس موقع پر سکیورٹی فورسز کی جانب سے فری میڈیکل  کیمپ کا انعقاد بھی کیا گیا ہے جبکہ واپس آنے والے خاندانوں کو فوری کھانا مہیا کرنے کے ساتھ ساتھ ،خشک راشن، گرم کپڑے، بستر، ٹینٹ اور روزمرہ کے استعمال کی دیگر چیزیں بھی فراہم کی جا رہی ہیں جبکہ احساس پروگرام کے تحت ہر خاندان کی رجسٹریشن بھی کی جارہی ہے جن کی آبادکاری کے لئے ضلعی انتظامیہ اور فرنٹیئرکور(نارتھ) کی کاوشوں کو علاقہ مکین بھی سراہتے ہیں ۔کمانڈر پشاور کور لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید اور انسپکٹر جنرل فرنٹیئر کور (نارتھ) میجر جنرل عادل یامین نے مارچ کے دوسرے ہفتے میں وادٔ تیراہ میں منعقد ہونے والے جرگہ میں واپس آنے والے افراد اور علاقہ مشیران سے ملاقات کی اور ان کے مسائل کے حل کی یقین دہانی کے ساتھ ساتھ مستقبل کے حوالے سے علاقہ کے لئے کئے جانے والے اقدامات کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔ اس کے ساتھ ساتھ مارچ میں سابقہ چیئر پرسن احساس پروگرام ثانیہ نشتر نے بھی وادٔ تیراہ میں واپس آنے والے خاندانوں کا استقبال کیا اور احساس پروگرام کے تحت ان خاندانون کی رجسٹریشن کو یقینی بنانے کے احکامات جاری کئے تھے۔اب تک علاقے میں واپس آنے والے تمام خاندانوں کی احساس پروگرام کے تحت رجسٹرشن مکمل کی جا چکی ہے ۔ وادی تیراہ اپنی خوبصورتی اور جغرافیائی اہمیت کے حوالے سے اہم مقام رکھتا ہے ۔علاقے میں امن کے قیام کی خاطر کوچ کرنے والے یہ خاندان واپس آرہے ہیں۔علاقے میں ترقی کا ایک نیا دور شروع ہوگیا ہے جس سے یہاں کی عوام مستفید بھی ہوگی اور ملک کی ترقی میں اپنا کردار بھی ادا کرے گی۔



 

Read 112 times


TOP