ہمیں پیار ہے پاکستان سے

جنرل ہیڈکوارٹرز میں منعقدہ یوم دفاع و شہداء کی ولولہ انگیز تقریب کا احوال

یومِ دفاعِ پاکستان ''یومِ تجدیدِ عہد ہے '' کیونکہ جنگ ستمبر 1965ء کے دوران جو کارہائے نمایاں ہماری بہادر مسلح افواج نے انجام دئیے وہ حربی تاریخ کا ایک انمٹ اور عالی شان باب ہیں ۔ جنگِ ستمبرکے جذبے کو اجاگر کرنے اور نئی نسل کو اپنے اسلاف کے کارناموں سے روشنا س کرانے کے لئے اس طرح کے ایام کو ان کے شایانِ شان منایا جانا چاہئے تاکہ دشمن کی جانب سے روا رکھی جانے والی جنگ اور سازشوں کو نئی نسل کے سامنے اجاگر کیا جا سکے تاکہ وہ اپنے دشمن کی جانب سے کسی ممکنہ تدبیراتی و تزویراتی جنگ کے خلاف تیار رہیں۔ پاک افواج آزمائش کی ہر گھڑی میں عوام کی امیدوں پر پورا اتری ہیں۔ انہوں نے ثابت کیا ہے کہ عزم و ارادہ مضبوط ہو او رمنزل کے حصول کی لگن شدید ہو تو کوئی بھی ہدف حاصل کرنا مشکل نہیں ہوتا ۔ جنگ ستمبر 1965ء صرف ایک جنگ ہی نہیں تھی بلکہ یہ پاکستانی قوم کے صبر و استقامت کا ایک امتحان بھی تھا جس میں قوم او ر فوج کے ہر شعبے نے یہ ثابت کر دیا کہ تعداد اورسازو سامان سے بڑھ کر جذبۂ ایمانی اور اپنے پیشے سے سچی لگن ہی کامیابی کی دلیل اول ہوتی ہے ۔ جنگ ستمبر میں اپنے سے کئی گنا بڑے دشمن کو عبرت ناک شکست سے دوچار کرنا آسان نہ تھا مگر قوم ،افواج کے شانہ بشانہ ہو تو ایسے کارنامے دیکھے جا سکتے ہیں ۔

 

اس سال یوم دفاع و شہداء منفرد انداز سے منایا گیا ۔ افواجِ پاکستان نے 6 ستمبر 2018 ء کو ''ہمیں پیار ہے پاکستان سے''کے عنوان کے تحت شاندار انداز میں اپنے شہداء کو خراج تحسین پیش کیا ۔ قوم نے ملک بھر میں مختلف  تقریبات میںشہداء کے لواحقین اور غازیوں کو خراج تحسین پیش کرکے روایتی جذبے سے اپنا یہ عزم دہرایا۔ اس سلسلے کی سب سے بڑی تقریب جنرل ہیڈکواٹرز راولپنڈی میں منعقد ہوئی جس نے وطن کے کونے کونے کو '' ہمیں پیار ہے پاکستان سے '' کے لازوال جذبے سے سرشار کر دیا۔ اس تقریب میں شہداء کے لواحقین اور غازیوں کو بھر پور انداز میں سلامِ عقیدت پیش کیاگیا اور اس کے ساتھ ساتھ ان کے کارناموں کو اجاگرکیا گیا ۔شہداء کی قربانی اور ان کے اہلِ خانہ اور لواحقین کے جذبات کے اظہارکے دوران ہر آنکھ پرنم تھی۔

چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے اپنے خطاب میں شہداء اور غازیوں کی قربانیوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ پوری قوم شہدا ء اور ان کے لواحقین کی احسان مند ہے۔ ان کے پیاروں کی قربانیوں کی بدولت آج ہم اس مقام پرہیں جہاں وطن پر چھائے اندھیرے چھٹ رہے ہیں اور ایک روشن مستقبل ہمارے سامنے ہے ۔ شہداء کا خون ہم پر قرض ہے ۔ انہوں نے کہا آج کا دن شہدائے پاکستان سے یکجہتی کا دن ہے اورآپ سب کویہاں دیکھ کر ہمارے اعتماد اور حوصلے میں مزید اضافہ ہوا ہے۔ دفاعِ پاکستان کے لئے ہم سب یک جان  ہیں، 6 ستمبر ملکی تاریخ کا اہم دن ہے۔6 ستمبر1965 کو پوری قوم کے ساتھ مل کر مکار دشمن کے دانت کھٹے کئے گئے اور ہر پاکستانی وطن کا سپاہی بنا اور متحدہو کر اپنا اپنا کردار ادا کیا۔ ہمارے سپاہی اور افسر آگ میں کود پڑے لیکن ملک پر آنچ نہ آنے دی۔ ستمبر1965 کی جنگ میں قوم کے عزم اور بہادری کی داستانیں آج بھی ہمارے لئے مشعلِ راہ ہیں۔

 

تقریب سے اپنے خطاب کے دوران جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ ہماری قومی زندگی بے شک مشکلات کا شکارہے تاہم ہم متحد اور یکجاں ہیں اور ہمارے جوانوں کی جرأت قائم ہے لہٰذا پاکستان کو کوئی بھی نقصان نہیں پہنچا سکتا۔ اس جذبے کا تعلق صرف جنگ سے نہیں بلکہ قومی ترقی کے ہر پہلو سے ہے ۔ ہم متحد اور یکجان رہے  تو ترقی بھی کریں گے اور اپنے وطن کو مزید مضبوط بھی کریں گے ۔اس کے لئے جمہوریت کا تسلسل بہت ضروری ہے ۔ کشمیر کے حوالے سے واضح مؤقف کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا مقبوضہ کشمیر کے عوام پچھلی کئی دہائیوں سے آزادی کی جدوجہد کر رہے ہیں اور ہم ان کی اس جدوجہد کی حمایت کرتے ہیں۔

 مہمانِ خصوصی وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے اپنے جذبات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میں شہدا ء کے لواحقین اور غازیوں کا شکر گزار ہوں جن کے پیاروں نے ہمارے کل کے لئے اپنا آج قربا ن کیا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ سول ملٹری تعلقات کوئی مسئلہ نہیں ہم سب کا ایک ہی مشترکہ مقصد ہے کہ مل کر اس ملک کو آگے لے کر جانا ہے ۔ہمیں اپنے ادارے مضبوط کرنے ہیں کیونکہ سیاسی مداخلت سے ادارے تباہ ہو جاتے ہیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ ہماری خارجہ پالیسی ایک آزادانہ پالیسی ہو گی اور میں قوم سے وعد ہ کرتا ہوں کہ پاکستان کی ترقی کے لئے بہترین اقدام اٹھائوں گا۔یہاں کا ہر بچہ سکول جائے گا اور ہر مزدور کو اس کا حق ملے گا۔ وزیراعظم نے قوم کے شہداء کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ اللہ رب العزت نے شہداء کا درجہ بہت بلند رکھا ہے۔ انہوں نے شہداء کے لواحقین کے صبر و تحمل کو بھی سلام پیش کیا۔

 

تقریب میں تینوں مسلح افواج کے سربراہان کے ساتھ ساتھ سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر، وزیر دفاع پرویز خٹک ، وزیر خزانہ اسد عمر، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی ، وزیر اطلاعات فواد چودھری ، ریلوے کے وزیر شیخ رشید، وزیر مملکت برائے داخلہ شہر یار آفریدی، قومی اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر شہبا ز شریف ، چیئر مین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو ،میڈیا کے نمائندگان اور مختلف ممالک کے سفیروں اور دفاعی اتاشیوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ تقریب میں شہداء کے اہلِ خانہ اور غازیوں کو بطور خاص مدعو کیا گیا تھا۔ تقریب میں شامل تمام افراد نے دفاع وطن کے لئے جانیں قربان کرنے والے شہداء کو زبردست خراج عقیدت پیش کیا۔

 

Comments



Note: No comments!



Leave a Reply

Success/Error Message Goes Here
Note: Please login your account and then leave comment!
TOP