اگست 2017
شمارہ:8 جلد :54
تحریر: یوسف عالمگیرین
14اگست1947کو معرض وجود میں آنے والے وطنِ عزیز پاکستان کو اپنے قیام کے آغاز ہی سے متعدد چیلنجز کا سامنا رہا۔ اس نوزائیدہ ریاست نے ہندوستان کی اَن گنت سازشوں کا سامنا کیا۔ لیکن پھر بھی اپنا سفر اعتماد اور وقار کے ساتھ جاری رکھا ہے۔ پاکستان ایک نظریے اور مقصد کے پیش نظر قائم ہوا جہاں برِصغیر کے مسلمان مذہبی، سیاسی، معاشی و سماجی اعتبار سے....Read full article
 
تحریر: ڈاکٹر رشید احمدخان
گزشتہ تقریباً ڈیڑھ ماہ سے بھوٹان سے ملنے والی سرحد پر چین اور بھارت کی فوجیں آمنے سامنے کھڑی ہیں۔ وجہ تنازعہ سطح مرتفع پر مشتمل ایک چھوٹا سا علاقہ ڈوکلم
(Doklam Plateau)
ہے۔ جہاں بھارت، بھوٹان اور چین کی سرحدیں آپس میں ملتی ہیں۔ اصل معاملہ بھوٹان اور چین کے درمیان ہے بھوٹان کا کہناہے کہ یہ علاقہ اُس کا حصہ ہے۔ جبکہ چین کامضبوط دعویٰ ہے کہ یہ علاقہ زمانہ قدیم ....Read full article
 
 alt=
تحریر: فرخ سہیل گوئندی
بحیرۂ روم سے بحیرۂ عرب تک پھیلا جس طرح مشرقِ وسطیٰ آج عالمی سیاست کا محور ہے، اگر ہم تاریخ میں جھانک کر دیکھیں تو یہی خطۂ ارض پچھلے تین ہزار برسوں سے زائد عرصے سے ایشیا، افریقہ اور یورپ کی تہذیب و تمدن اور سیاست کا مرکزومحور رہا ہے۔ دنیا کی قدیم ترین تہذیبوں نے یہیں سے جنم لیا۔ سمیری اور مصری تہذیب، یونانی تہذیب جسے آرکیالوجسٹ، یوریِشین تہذیب کہتے ہیں، انہی خطوں کے قریب....Read full article
 
تحریر: جبارمرزا
پاکستان قائم ہوئے پورے ستر برس بیت گئے۔ البتہ موجودہ 14اگست پاکستان کی تاریخ کا اکہترواں ہے۔ پہلا 14اگست 1947کا تھا جس روز پاکستان قائم ہوا تھا۔ 14اور 15اگست کی درمیانی رات برصغیر دو حصوں میں تقسیم ہو گیا تھا۔ ایک حصہ پاکستان کہلایا اور دوسرا ہندوستان۔ 14اور 15اگست 1947 کی درمیانی رات بارہ بجے پہلے انگریزی میں جناب ظہور آذر نے اور پھر اردو میں جناب مصطفی علی ہمدانی نے ریڈیو....Read full article
 
تحریر: عبد الستار اعوان
افواج پاکستان کی پیشہ ورانہ حربی صلاحیتوں پر قوم کوہمیشہ نازرہا ہے ۔ محافظانِ وطن کی کامیابیوں ، کامرانیوں اور جرأتوں پر مبنی داستانوں کو قلمبند کرنا آسان نہیں ، بلاشبہ اس قوم کے ایک ایک فرد کے دل میں پاک فوج کی جو محبتیں بسی ہیں، ان کے پیچھے عزم و ہمت اور قربانیوں کی طویل داستانیں ہیں۔ سیلاب اور زلزلہ متاثرین کی بحالی ہو یا سیاچن سے لے کر وزیرستان ، بلوچستان اور ملک کے چپے چپے پر.....Read full article
 
تحریر: ڈاکٹر صفدر محمود
آپ کو یاد ہوگا کہ میں نے اپنے گزشتہ مضمون میں قیام پاکستان کے ایک اہم پہلو پر روشنی ڈالی تھی اور لکھا تھا کہ14-15 اگست کی نصف شب جب پاکستان معرض وجود میں آیا تو یہ قدر کی مبارک رات تھی۔ جسے ہم لیلتہ القدر کہتے ہیں۔ 15 اگست 1947ء کو جب پاکستانی قوم نے اپنا پہلا یوم آزادی منایا تو اس روز ستائیسویں رمضان اور جمعتہ الوداع کا دن تھا۔ گویا ساری نیک ساعتیں اس روز یکجا ہوگئی تھیں۔....Read full article
 
تحریر: ملیحہ خادم
مذہب انسان کی زندگی کا وہ حساس پہلو ہے جس پروہ شاذ ونادر ہی کوئی سمجھوتہ کرتاہے بلکہ یہ کہنا زیادہ مناسب ہوگا کہ مذہب سے انسان کی دلی یا جذباتی وابستگی اتنی زیادہ ہوتی ہے کہ اچھے یا بُرے معنوں میں مذہب کے نام پر آسانی سے جذبات سے کھیلا جاسکتا ہے۔ یہ ہی وہ نکتہ ہے جو انسانی جبلت کے نرم خو یا متشدد پہلو کوابھارتا ہے۔ کسی بھی مذہب میں تشدد کی اجازت نہیں اور نہ ہی ناحق خون بہانے کی حوصلہ افزائی کی گئی ہے لیکن پھربھی اس کے اندر موجود.....Read full article
 
تحریر: فتح محمد ملک
آج جب نظریاتی استقامت کو انتہا پسندی کا نام دیا جاتا ہے تو مجھے "ہندوستان ٹائمز" کا وہ خراجِ تحسین یاد آتا ہے جو اس مؤقر روزنامہ نے قائداعظم کو پیش کیا تھا۔ بابائے قوم کی رحلت پر ’’ہندوستان ٹائمز‘‘ نے لکھا تھا کہ اُن میں ایسی قوتِ ارادی تھی جو اُن کی راہ میں حائل ٹھوس حقائق کو توڑ پھوڑ کر خوابوں کو جیتے جاگتے حقائق میں منتقل کر سکتی تھی۔....Read full article
 
سروے: زین سرفراز
نوجوان نسل کسی بھی قوم کا قیمتی اثاثہ ہوتی ہے۔ قوموں پر جب بھی کبھی آزمائش کا دور آتا ہے تو نوجوان نسل اس آزمائش سے نکلنے کے لئے اپنا کردار ادا کر تی ہے۔ تحریکِ آزادئ پاکستان میں بھی نوجوانوں کا کردار ناقابل فراموش رہا ہے۔ موجودہ حالات میں بھی نوجوانوں کے دل میں وطنِ عزیز کو عظیم سے عظیم تر بنانے کا جذبہ موجزن ہے۔ ....Read full article
 
تحریر: لیفٹیننٹ کرنل ضیاء شہزاد
ناردرن لائٹ انفنٹری (این ایل آئی) کی کارگل کے محاذ پر شاندار کارکردگی سے سب بخوبی واقف ہیں۔ معرکہ کارگل سے پہلے این ایل آئی کی بٹالینز صرف شمالی علاقہ جات میں عسکری خدمات سر انجام دیا کرتی تھیں۔ بعد ازاں انہیں ریگولر رجمنٹ کا درجہ دے دیا گیااور یوں ان کی خدمات کا دائرہ کار پورے ملک پر محیط ہو گیا۔ این ایل آئی یونٹس نے موقع ملتے ہی دوسرے محاذوں پر بھی اپنی جنگی صلاحیتوں کا بخوبی لوہا منوایا....Read full article
 
تحریر: سمیع اﷲ سمیع
سرحدیں دل کی ہوں یا دنیا کی، کبھی ایک سی نہیں رہتیں ۔ پیہم تبدیلی ہی زندگی کی دلیل ہے۔ لفظ تقسیم برا بھی ہے اوراپنے تئیں اچھا بھی ہے۔کانگریسی صدراورسابق بھارتی وزیرداخلہ سردارپٹیل واشگاف الفاظ میں اقرارکرتے تھے کہ اگر دوبھائیوں کے مابین جھگڑا ختم نہ ہورہاہوتو تقسیم یقینی ہوتی ہے اوریہ فطری عمل ہے۔درحقیقت بروقت اورمبنی برانصاف تقسیم ہی کدورتوں کوروکتی ہے لیکن افسوس کہ ماؤنٹ بیٹن کی.....Read full article
 
تحریر: کیپٹن بلال نیازی
اور تم کیا جانو یہ کون لوگ ہیں؟جن کے قدموں کی دھمک سے پہاڑ تھرتھراتے ہیں۔جنہوں نے انسانی لباس پہن رکھاہے مگرجن کی پیشانیوں پرآسمان تحریریں لکھ رہا ہے۔ یہ کون راہرو ہیں جن کے قدم کبھی تھکتے نہیں؟یہ فاتح کون ہیں جنہوں نے بھوک اور پیاس کو یرغمال بنا رکھا ہے؟ جن کے ماتھے پر پسینے کی بوندیں اچکنے کے لئے فرشتے تیار ہیں۔ایسے جذبے سے سر شار کچھ ایسی ہی داستان حوالدار ظہور احمد.....Read full article
 
اس دنیا میں اربوں لوگ ہیں اور اس میں سے ہر شخص کی کوئی نہ کوئی پسندیدہ شخصیت ہے۔ میری پسندیدہ شخصیت میرے بابا میجر اکبر شہید ہیں۔ وہ اس ملک کے ہیرو ہیں۔ انہوں نے اپنے ملک کے لئے جان قربان کر دی۔ مجھے ان کے .....Read full article
 
تحریر: ڈاکٹر ہما میر
آرٹس کونسل کراچی میں تو ایک دن میں کئی ایسے پروگرام ہوتے ہیں اور ان میں شرکت کرکے یا نظامت کرکے بہت اچھا لگتا ہے۔ گزشتہ دنوں ونکوور میں دو ایسی ادبی تقاریب منعقد ہوئیں جن سے اپنے دیس کی یاد تازہ ہوگئی۔....Read full article

تحریر: کوکب علی
’’ یوکرائن کی چمکدار زمین۔۔۔ تم ہمیشہ دمکتی رہو۔۔۔متحد اور شبنم کے قطروں کی طرح تابناک رہو۔یہاں تک کہ سورج تمہیں ماند نہ کر دے۔۔۔۔
ہم زمین پر حکومت کریں گے اور اس کو ترقی کی منازل تک پہنچائیں گے۔۔۔
ہم نے اپنی روح تک اس زمین کی آزادی کے لئے قربان کی۔۔ جذبہ اور محنت ہمارے روشن مستقبل کی ضمانت ہیں ........Read full article
 
تحریر: محمد اعظم خان
ستمبر1965 کی جنگ کے دوران مجھے ہر روز ایک نیاملی نغمہ پروڈیوس کرنے کا حکم تھا اور میری یہی کوشش ہوتی کہ کوئی دن خالی نہ جائے ۔یہ میرے لئے بہت بڑی ذمہ داری تھی کہ نور جہاں جیسی بڑی فنکارہ کی ریڈیو پاکستان میں موجودگی سے فائدہ نہ اٹھایا جائے۔ روزانہ ایک نئے نغمے کا انتخاب بھی بڑا مشکل کام ہوتا۔ 13 ستمبر1965 کو میرے پاس فائل میں موصول ہونے والے بے شمار نغمے تھے مگر....Read full article
 
تحریر: حفصہ ریحان
کدھرکھوئے ہومجاہد؟؟ حیدر نے پیچھے سے آکرپوچھا۔
ادھرہی توبیٹھاہواہوں۔ اس نے مڑے بغیرجواب دیا۔
گھرمیں سب کیسے تھے ؟؟؟
گھر؟؟؟؟ اس نے حیرانی سے حیدرکی طرف دیکھا۔
ہاں یارگھر۔تم گھر گئے تھے نا!آج پانچ دن بعد ہی توآئے ہو۔حیدرمسکراتے ہوئے بولا۔۔
ہاں ہاں گھر گیاتھامیں۔۔وہ بوکھلاتے ہوئے بولا۔
تو وہی پوچھ رہا ہوں ناکہ گھرمیں سب کیسے ہیں؟؟....Read full article
Read 140 times

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.

Follow Us On Twitter