جولائی 2017
شمارہ:7 جلد :54
تحریر: یوسف عالمگیرین
ادارے ملکی سلامتی اور بقاء کے ضامن ہوا کرتے ہیں۔ ملک کا ہر فرد اور سبھی ادارے باہم مل کر ریاست کی بنیادیں مضبوط کرتے ہیں۔ لہٰذا ادارے جتنی تن دہی اور اولوالعزمی سے اپنے اپنے حصے کے فرائض انجام دے رہے ہوں‘ ریاست اُسی طرح سے ترقی اور وقار کی منازل طے کرتی چلی جاتی ہے۔ افواجِ پاکستان بھی دیگر اداروں کی مانند اپنے حصے کا کام جو کہ وطنِ عزیز کی جغرافیائی....Read full article
 
تحریر: عقیل یوسف زئی
سیاسی اور دفاعی ماہرین کا خیال ہے کہ افغان حکومت پر متعدد ایسی عالمی اور علاقائی قوتیں اثر انداز ہو رہی ہیں جو نہیں چاہتیں کہ دونوں ممالک کے تعلقات بہتر ہوں۔ جبکہ افغان حکومت کے اندرونی اختلافات اور اداروں کے درمیان مس انڈرسٹینڈنگ جیسے عوامل کے باعث نہ صرف حملہ آور تنظیمیں پھر سے طاقت پکڑنے لگی ہیں بلکہ حملوں کی تعداد بھی روز بروز بڑھتی جا رہی ہے....Read full article
 
 alt=
تحریر: ڈاکٹر رشید احمدخان
جون کے پہلے ہفتے میں چھ عرب ممالک جن میں سے تین یعنی سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور بحرین کا تعلق خلیج تعاون کونسل سے ہے، نے قطر کے ساتھ سفارتی تعلقات ختم کر کے اس کے ساتھ تمام زمینی اور فضائی روابط منقطع کرنے کا اعلان کر دیا۔ اس اقدام کا ساتھ دینے والے باقی تین عرب ممالک مصر، لیبیا اور یمن ہیں۔ بعد میں تین اور ممالک یعنی جبوتی، نائیجیریا اور مالدیپ بھی اس میں شامل ہو....Read full article
 
تحریر: فرخ سہیل گوئندی
شنگھائی کوآپریشن آرگنائزیشن نے سرد جنگ کے خاتمے کے بعد خطے میں بدلتی صورتِ حال کے نتیجے میں ایک نئے علاقائی اتحاد کے طور پر جنم لیا۔ سرد جنگ کے زمانے میں، سابق سوویت یونین اور ریاست ہائے متحدہ امریکہ کے مابین مقابلے کے نتیجے میں دونوں طاقتوں نے اپنے ہاں اسلحے کے انبار لگانا شروع کردئیے۔ جب سرد جنگ کا خاتمہ ہوا تو دنیا کے مختلف ممالک علاقائی اقتصادی....Read full article
 
تحریر: صائمہ جبار
قائداعظم محمدعلی جناحؒ نے کشمیر کوپاکستان کی شہ رگ قرار دیا تھا۔ظاہر ہے شہ رگ کے بغیر کوئی شخص زندہ نہیں رہ سکتا۔یہی وجہ ہے کہ پاکستانیوں کے دل اپنے کشمیری بہن بھائیوں کے ساتھ دھڑکتے ہیں۔ وہ ظلم و ستم کا شکار ہوں تو یہ کیسے ممکن ہے کہ یہاں کے شہری پُرسکون رہ سکیں۔ گویا ان کی بے قراری ایک فطری امر ہے۔.....Read full article
 
تحریر: ڈاکٹر صفدر محمود
میں اس بات پر یقین رکھتا ہوں کہ انسان زندگی بھر سیکھتا ہی رہتا ہے ۔ اس کے سیکھنے کا عمل یا علم حاصل کرنے کا سلسلہ قبر تک جاری رہتا ہے۔ علم و تحقیق کی دنیا میں کوئی حرف ،حرف آخر نہیں ہوتا اور نہ ہی کوئی انسان کامل علم کے حصول کا دعویٰ کرسکتا ہے۔ میں ایک معمولی سا طالب علم ہوں ، سیکھنے کی دل میں آرزو ہے اور مکالمے پر یقین رکھتا ہوں۔ البتہ اس بات کا قائل ہوں....Read full article
 
تحریر: عبد الستار اعوان
47ء میں تقسیم کے بعد بھارت کی فضا کبھی بھی مسلمانوں کے لئے سازگار نہیں رہی تاہم جب سے نریندر مودی ا ورا ن کا ٹولہ برسراقتدار آیا ہے مسلمانوں کے خلاف ریاستی سطح پر نفرتوں میں خاصا اضافہ ہوا ہے اوریہ سرزمین ان پر اس قدر تنگ کر دی گئی ہے کہ اس کا تصور بھی لرزا دیتا ہے۔بھارت کے سنجیدہ حلقے بھی یہ نقطہ نظر رکھتے ہیں کہ ملک میں.....Read full article
 
تحریر: ملیحہ خادم
دریا، پہاڑ، سمندر، صحرا،زر خیز زمین اور چارموسم۔ یہ وہ اجزائے ترکیبی ہیں جواگرکسی ملک کے پاس ہوں تو وہاں کے باشندوں کو خوش قسمت خیال کیا جاتا ہے کیونکہ ان چھ عناصر کی موجودگی میں معیشت خود انحصاری کی راہ پر رواں دواں رہتی ہے اور عوام خوشحال رہتے ہیں نیز بہتر طرز زندگی کی ضمانت اور ذرائع روزگار بھی ہمہ وقت میسر ہیں- چونکہ مضبوط اورمستحکم معاشی حالات پرسکون معاشرے کو....Read full article
 
تحریر: یاسرپیرزادہ
خدا نے انسان کو فیصلے کرنے کا کتنا اختیار دیا ہے؟ انسان اپنے معاملات میں کس قدر آزاد ہے؟ اگر سب کچھ کاتب تقدیر نے لکھ ڈالا ہے تو پھر انسان کی آزادی کے کیا معنی ہیں اور اگر اس کی آزادی خدا کی منشا کے تابع ہے تو پھر اس سے بازپرس کیوں کر ہو گی؟ یہ وہ مسائل ہیں جن پر صدیوں سے بحث جاری ہے مگر کوئی حتمی نتیجہ نہیں نکل سکا۔ امام ابوحنیفہؒ نے اس مسئلے پر بہت دلچسپ انداز میں ....Read full article
 
تحریر: لیفٹیننٹ کرنل ضیاء شہزاد
چُھٹی سے زیادہ دلفریب لفظ شاید فوجی ڈکشنری میں ڈھونڈے سے بھی نہ ملے۔ چھٹی کی مثال عسکری زندگی کے صحرا میں ایک ہرے بھرے نخلستان کی مانند ہے جس کے تصور سے ہی روزمرہ کی کٹھنائیوں کی شدت کم ہو کر نہ ہونے کے برابر رہ جاتی ہے۔ سپاہی کی زندگی چچا غالب کی طرح ہزاروں خواہشوں کا مرقع نہیں ہوتی بلکہ لے دے کر اس کی سوچ کا ....Read full article
 
تحریر: حمیرا شہباز
آپ کے ملک میں سب باقاعدگی سے نماز پڑھتے ہیں؟میری روم میٹ کی جانب سے انتہائی غیر متوقع سوال تھا ۔ وہ میرے عقب میں دائیں طرف والے بستر پر بیٹھی مجھ سے مخاطب تھی جبکہ میں کل کی کانفرنس کی تیاری میں مقالہ دہرانے کے بجائے اپنے بستر پر بیٹھی نیا جوڑا استری کر رہی تھی۔ ہم دونوں کو ایک ساتھ رہتے ہوئے چوبیس گھنٹے تو ہو چکے تھے لیکن سلام ،صبح بخیر،.....Read full article
 
تحریر : وقاراحمد
مناماٹا کنونشن ایک عالمی سطح کا معاہدہ ہے جو انسانی صحت اور قدرتی ماحول کو مرکری کے نقصان دہ اثرات سے تحفظ دینے کے لئے تشکیل دیا گیا۔اقوامِ متحدہ کے زیرِ سرپرستی اس معاہدے پر 19 جنوری2013 کو سوئٹزر لینڈ کے شہر جنیوا میں دستخط ہوئے اور اسی سال اکتوبر میں جاپان کے شہر کما موٹو میں مناماٹا کنونشن کی باقاعدہ توثیق کردی گئی۔ اس کنونشن میں پاکستان سمیت دنیا کے 128 ممالک دستخط کر چکے.....Read full article
 
تحریر: ڈاکٹر عاطف منصورملک
اگر آپ اکبری دروازے سے اندرون لاہو ر میں داخل ہوں تو تنگ بازار سے گزر کر محلہ سریاں والا آتا ہے۔ غازیا علم دین شہید کا گھر اِسی محلے میں تھا، انہی کے نام پر اب وہا ں کا چوک موسوم ہے۔ اس چوک سے بائیں جانب مڑ کر کوچہ چابک سواراں سے گزرتے جائیے تو آگے محلہ ککے زئیاں آتا ہے۔ ککے زئی اسے عرفِ عام میں بڑی گلی کہتے ہیں۔ گو کہ یہ گلی اتنی تنگ ہے کہ کسی مرگ پر جنازہ .....Read full article
 
تحریر: ڈاکٹر ہما میر
آج ہم اپنے مضمون میں ایک ایسے تجربے کا ذکرکرنا چاہتے ہیں جو عمر بھر کے لئے ہمارے دل و دماغ پہ ثبت ہوگیا ہے۔ ہمیں وہ دیکھنے کو ملا جس کا ہم شاید کبھی گمان بھی نہ کرسکتے ہوں۔ اگر چہ2015 میں بھی ہم نے اس کی جھلک دیکھی تھی۔ مگر اس بارہم خود اس کا حصہ تھے لہٰذا ہمیں قریب....Read full article

تحریر: مجاہد بریلوی
لندن میں ہوں۔ لاہور کے دفتر سے حکمِ حاکم آیا کہ یہاں کے الیکشن بہت دیکھ لئے اب ذرا برطانوی الیکشن دیکھنے جائیں۔ ایئرپورٹ سے میلوں کا فاصلہ طے کر تے ہوئے اپنے ٹھکانے پر پہنچے۔ راستے میں نہ کوئی جلسہ‘ نہ دھرنا‘ نہ پوسٹر‘ نہ بینر‘ یہ کیسا الیکشن ہے؟
دل تو میرا اُداس ہے ناصر
شہر کیوں سائیں سائیں کرتا ہے........Read full article
 
تحریر: وثیق شیخ
چونڈہ کا محاذ اس لحاظ سے بہت منفرد اہمیت کا حامل ہے کہ باون سال گزرنے کے بعدبھی اس میدان جنگ کی اہمیت کم نہیں ہوئی۔ یہ وہ محاذ ہے۔ جہاں 1965 میں دنیا کی دوسری بڑی ٹینکوں کی جنگ لڑی گئی۔ آج بھی قصبہ چونڈہ کے جوان ان ہی میدانوں میں سیر کرتے ہوئے اپنے بزرگوں سے جنگ کی ولولہ انگیز داستانیں سن کر اپنے خون کو گرماتے ہیں۔ جہاں بھارتی اور پاکستانی .....Read full article
 
تحریر: موناخان
نہ تو ہم جیمز بانڈ ہیں اور نہ ہی ہماری پچھلی نسل میں کوئی صحافی رہا ہے۔ یہ جسارت اپنے پورے خاندان میں ہم نے ہی کی ہے۔ یہ صحافت کا کیڑا کب سرایت کر گیا پتہ ہی نہیں چلا۔ جی تو بات ہو رہی تھی مشن نیپال کی۔ گزشتہ شمارے میں جس نیپال کی کتھا آپ کو سنائی تھی، اس کا اصل قصہ تو ابھی باقی ہے۔ فوج سے جلد ریٹائرمنٹ لینے والے بہت سے فوجی سکیورٹی ایجنسیز کھول لیتے ہیں یا کسی بڑے تھنک .....Read full article
 
تحریر: محمد اعظم خان
میڈم نور جہاں کا فنی سفر چھ دہائیوں پر محیط ہے۔ ان تمام کا ذکریہاں بیان کرنا مقصود نہیں۔ میں اس وقت صرف میڈم نور جہاں کے اُن ملی نغموں کا ذکر کرتا ہوں جو ریڈیو پاکستان میں ہم نے مل کر پروڈیوس کئے۔آج جس نغمے کا ذکر ہے یہ 12 ستمبرکو ریکارڈ کیا گیا۔ اس کے شاعرتنویر نقوی ہیں۔....Read full article
 
تحریر: اسد عباس ملک
یہ مارچ کی ایک سہانی صبح تھی جب ہم کراچی سے براستہ حیدر آباد اور میر پور خاص عمر کوٹ (تھرپارکر) کے لئے روانہ ہوئے۔ میرپور سے گزرتے ہوئے روڈ کے دونوں طرف آموں کے بور بھرے سرسبز باغ ہمیں بیک وقت بہار اور گرمیوں کی آمد کا پتہ دے رہے تھے۔ میلوں پھیلا ہوا سبزہ، ہلکی سنہری چادر اوڑھے گندم کے کھیت اور ان میں رزق حلال کی تپسیا کرنے والے افراد ایک منظر .....Read full article
 
تحریر: عثمان انصاری
پاک بحریہ بحرِ ہندکی ایک طاقتور اور تجربہ کار بحری قوت ہے جو کہ بحرِ ہند میں امن اور باہمی تعاون کو یقینی بنانے میں کلیدی کردار ادا کررہی ہے۔ انفرادی سطح پر پاک بحریہ بحر ہند کے شمال میں بحیرہ عرب میں امن و استحکام کی سب سے بڑی ضامن ہے ۔ بحیرہ عرب کو اس وجہ سے بھی اہمیت حاصل ہے کہ یہ سمندر خلیجی اور عالمی ممالک کے درمیان توانائی اور تجارت کا اہم راستہ ہے....Read full article
Read 159 times

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.

Follow Us On Twitter